مورخہ 11مئی2016ء بروز بدھ

حمایت مایار کی بحالی باطل کی شکست اور حق کی فتح ہے، سردار حسین بابک
عدالتی فیصلہ خوش آئند ہے ، اے این پی نے ہمیشہ عدالتی فیصلون کا احترام کیا
وزیر اعلیٰ اختیارات کا ناجائز استعمال کر کے مخالفین کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنا رہے ہیں
ناظم و نائب ناظم پہلے سے زیادہ بھرپور جذبے کے ساتھ عوامی خدمت کا سلسلہ جاری رکھیں

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے ضلع ناظم مردان حمایت اللہ مایار کی بحالی کا خیر مقدم کرتے ہوئے انہیں مبارکباد پیش کی ہے اور کہا ہے کہ عدالتی فیصلے سے باطل کو شکست جبکہ حق و انصاف کی فتح ہوئی ہے،اپنے ایک تہنیتی بیان میں انہوں نے کہا کہ ناظم حمایت اللہ مایار کی بحالی اس بات کا ثبوت ہے کہ صوبائی حکومت کا فیصلہ غیر آئینی تھا اور اس نے حمایت اللہ مایار اور اسد علی کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا اور وزیر اعلیٰ نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے دونوں کو معطل کیا انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے میں بھی یہ کہا گیا ہے کہ صوبائی حکومت کا فیصلہ سیاسی انتقام پر مبنی ہے ، سردار حسین بابک نے کہا کہ اے این پی ایک عرصہ سے یہ مؤقف دہرا رہی ہے کہ صوبائی حکومت سیاسی مخالفین کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے جس کا واضح ثبوت حال ہی میں مردان میں کیا جانے والا وار ہے ، تاہم انہوں نے اس عدالتی فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں عدلیہ پر مکمل اعتماد ہے اور اس کے ہر فیصلے کو ہمیشہ خندہ پیشانی سے قبول کیا ہے ، سردار بابک نے مردان کے ناظم و نائب ناظم کو مبارکباد پیش کی اور اس امید کا اظہار کیا کہ وہ پہلے کی طرح اب بھی اپنی تمام تر توانائیاں بروئے کار لاتے ہوئے عوام کی خدمت کا سلسلہ جاری رکھیں گے،