مورخہ : 6.2.2016 بروز ہفتہ

تمام دہشتگرد گروپوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائیاں کی جائیں۔ میاں افتخار حسین
اگر نیشنل ایکشن پلان کے تمام نکات پر عمل کیا جاتا تو صورتحال کافی مختلف ہوتی۔
ضرورت اس بات کی ہے کہ پڑوسیوں کے ساتھ بہتر تعلقات قائم کیے جائیں اور نیپ کے تمام نکات پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے۔
اے این پی کوئٹہ کے شہداء کے لواحقین اور زخمیوں کے دُکھ میں برابر کی شریک ہے۔کوئٹہ دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین نے کوئٹہ میں دہشتگرد کارروائی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حملوں کا تسلسل اس جانب اشارہ ہے کہ دہشتگردوں کی صلاحیتیں ختم نہیں ہوئی ہیں اور وہ جب چاہیں حملہ کر دیتے ہیں۔
اے این پی سیکرٹریٹ سے جاریکردہ مذمتی بیان میں اُنہوں نے کہا ہے کہ اے این پی شہداء کے لواحقین کے غم میں برابر کی شریک ہے اور اس حملے کی شدید مذمت کرتی ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ دہشتگردی کی جڑیں بہت گہری اور مضبوط ہیں اور یہی وجہ ہے کہ اے این پی مسلسل یہی مطالبہ کرتی آرہی ہے کہ تمام دہشتگرد گروپوں کے خلاف کسی امتیاز اور رعایت کے بغیر کارروائیاں کی جائیں۔
اُنہوں نے مزید کہا کہ نیشنل ایکشن پلان کے تمام نکات پر اگر عمل کیا جاتا تو صورتحال کافی مختلف ہوتی تاہم افسوس کی بات یہ ہے کہ نامعلوم وجوہ کی بناء پر نیشنل ایکشن پلان عوام کی توقعات پر پورا اُترنے میں ناکام رہا ہے اور اسی کا نتیجہ ہے کہ وقتاً فوقتاً کارروائیاں ہوتی رہتی ہیں اور ان کارروائیوں سے فورسز سمیت معاشرے کا کوئی بھی طبقہ محفوظ نہیں ہے۔ اُنہوں مطالبہ کیا کہ پڑوسیوں کیساتھ تعلقات کی بہتری پر خصوصی توجہ دی جائے اور نیشنل ایکشن پلان کے تمام نکات پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے۔