12494338_162240460808035_969343928_o

مورخہ4.1.2016 بروز پیر

* معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے باچا خان ایجوکیشنل فاؤنڈیشن کا کردار اور خدمات قابل تقلید ہیں ’ سردار حسین بابک ‘
* فاؤنڈیشن چھ ہزار سے زائد طلباء اور طالبات کو مفت تعلیم فراہم کر رہی ہے اس ادارے کی حوصلہ افزائی کی ضرورت ہے۔
* تعلیم کے بغیر امن اور ترقی کا تصور ممکن نہیں ہے۔ باچا خان مرکز میں وفود سے بات چیت

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور پالیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ تعلیم کے بغیر امن اور ترقی کا تصور ممکن نہیں ہے ۔ یہی وجہ تھی کہ اے این پی نے اپنے دور حکومت میں تعلیم کے فروغ کیلئے ریکارڈ اقدامات کیے اور اسی کا نتیجہ ہے کہ صوبے میں تعلیم کی صورتحال ماضی کے مقابلے میں کہیں بہتر ہے۔
باچا خان مرکز پشاور میں مختلف وفود سے بات چیت کرتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ یہ بات خوش آئند ہے کہ باچا خان ایجوکیشنل فاؤنڈیشن نے صوبے کے دور دراز کے پسماندہ علاقوں میں اپنے پندرہ سکولوں کے ذریعے معیاری تعلیم کی فراہمی کو جدید دور کے تقاضوں کے مطابق بہت خدمات سرانجام دی ہیں جہاں اس وقت بھی چھ ہزار سے زائد طلباء اور طالبات کو مفت تعلیم دی جا رہی ہے اور پسماندہ علاقے ان سکولوں سے ترجیحی بنیادوں پر مستفید ہو رہے ہیں۔
اُنہوں نے کہا کہ فاؤنڈیشن عظیم بابا باچا خان کی اس جدوجہد اور فکر کا تسلسل ہے جو کہ اُنہوں نے کئی دہائیوں قبل پشتونوں میں علم کے پھیلاؤ کیلئے شروع کی تھی۔ اس لیے ضرورت اس بات کی ہے کہ صوبے میں تعلیم کے فروغ کیلئے باچا خان ایجوکیشنل فاؤنڈیشن کے ساتھ بھرپور تعاون کیا جائے اور عوامی سطح پر اس ادارے کی حوصلہ افزائی کر کے شرح تعلیم میں اضافے کی کوششوں میں اپنا اپنا حصہ ڈالا جائے۔