مورخہ 31مئی2016ء بروز منگل

بجٹ میں کی جانے والی کٹوتی حکومتی ناکامی کا واضح ثبوت ہے، سید جعفر شاہ
گزشتہ تین سال میں بجٹ کا کثیر حصہ خرچ نہیں کیا جا سکا،سرکاری محکمے زبوں حالی کا شکار ہیں
کالام اور چکدرہ تا مدین سڑک کی تعمیر کے وعدے تین سال سے ایفا نہیں ہو سکے
عمران خان اور نواز شریف نے دورہ سوات کے دوران عوام کو مایوس کیا ہے،

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے رکن اسمبلی اور ڈپٹی پارلیمانی لیڈر سیدجعفر شاہ نے کہا ہے کہ گزشتہ تین سال میں بجٹ کا کثیر حصہ خرچ نہیں کیا جا سکا اور اس سال بجٹ میں کی جانے والی کٹوتی حکومتی ناکامی کا واضح ثبوت ہے ،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ صوبہ خیبر پختونخوا دہشت گردی اور قدرتی آفات سے شدید متاثر ہوا جبکہ انفراسٹرکچر بھی تباہ ہو چکا ہے ، سید جعفر شاہ نے کہا کہ ھکومت کی جانب سے بحالی اور ترقی کا عمل انتہائی سست روی کا شکار رہا اور حکومت کا یہ رویہ متاثرین کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہے ، انہوں نے کہا کہ سرکاری محکموں کی کارکردگی ناقص ہے اور تمام محکمے سیاسی مداخلت کی بنا پر زبوں حالی کا شکار ہیں،انہوں نے کہا کہ صحت کا انصاف اور تعلیم سب کیلئے ‘‘ کے دعوے صرف کاغذوں تک محدود رہے جبکہ عملی طور پر سینکڑوں سکول بند ہو چکے ہیں ،اور سرکاری ہسپتالوں میں غریب مریضوں کیلئے سہولیات تک ختم کر دی گئی ہیں، انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے صوبہ خیبر پختونخوا کے عوام سے منہ موڑ رکھا ہے،سوات اور صوبے کے دوسرے علاقوں میں وفاقی حکومت کی کارکردگی نہ ہونے کے برابر ہے جبکہ کالام اور چکدرہ تا مدین سڑک کی تعمیر کے وعدے تین سال سے ایفا نہیں ہو سکے ،انہوں نے کہا کہ عمران خان اور نواز شریف نے دورہ سوات کے دوران عوام کو مایوس کیا ہے،
سید جعفر شاہ نے کہا کہ صوبے میں گڈ گورننس کا فقدان ہے سیاسی قیادت پانامہ لیکس اور خیبر لیکس کی زد میں ہے اور کود کو پاک صاف کرنے کی مہم میں لگے ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ ملاکنڈ میں کسٹم ایکٹ کے خاتمے کا نوٹیفیکیشن نہ ہونا حکومتی دوغلے پن کا واضح ثبوت ہے ، انہوں نے کہا کہ صوبے کے حالات بد سے بد تر ہوتے جا رہے ہیں،جس کی وجہ سے عوام میں سخت مایوسی پائی جاتی ہے۔