مورخہ 13اپریل 2016ء بروز بدھ

باجوڑ میں تا حال بند، موبائل فون سروس بحال نہ کی جا سکی ۔ ہارون بشیر بلور
قبائلی عوام کو امن کی خاطر جانہ و مالی قربانیوں کا صلہ سہولیات چھین کر دیا جا رہا ہے
وفاقی حکومت مزید پیکج فراہم نہیں کر سکتی تو کم از کم بنیادی سہولیات چھیننے سے گریز کرے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ترجمان ہارون بشیر بلور نے باجوڑ میں بازاروں اور موبائل سروس کی بندش کی ایک بار پھر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ باجوڑ میں بازاروں اور موبائل سروس کی بلاجواز بندش کا فوری طور پر نوٹس لیا جائے ،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ باجوڑ میں بغیر کسی وجہ کے بازار اور موبائل سروس بند کئے گئے ہیں جس کی وجہ سے غریب عوام پر روزگار کے دروازے بند کر دیئے گئے ہیں جبکہ موبائل سروس کی بندش سے ان کا رابطہ ملک کے دیگر حصوں میں بسنے والے اپنے پیاروں سے کٹ کر رہ گیا ہے ، انہوں نے کہا کہ حکومت لوگوں کو روزگار دینے کے وعدے پر اقتدار میں آئی لیکن خیبر پختونخوا اور قبائلی عوام کے ساتھ گزشتہ تین سال سے سوتیلی ماں جیسا سلوک روا رکھا ہوا ہے ، انہوں نے کہا کہ نواز شریف پنجاب کو ہی پاکستان تصور کر بیٹھے ہیں اور خیبر پختونخوا سے ان کو مینڈیٹ نہ ملنے کی سزایہاں کے عوام کو دی جا رہی ہے ، ہارون بشیر بلور نے کہا کہ قبائلی عوام نے امن کے قیام کیلئے اپنے گھر بار چھوڑے اور اپنے ہی خطے میں آئی ڈی پیز بن گئے تاہم مرکزی حکومت کو ان کی قربانیوں اور مسائل کا ادراک نہیں اور ملک میں امن کی خاطر جانی و مالی قربانیوں کا صلہ انہیں ان سے بنیادی ضروریات چھین کر دیا جا رہا ہے ،انہوں نے کہا کہ باجوڑکے عوام کے مسائل کا فی الفور نوٹس لیتے ہوئے وہاں کے بازار اور موبائل سروس بحال کی جائے تاکہ مسائل کی چکی میں پسنے والے عوام اپنا روزگار جاری رکھ سکیں ۔