مورخہ 8مئی2016ء بروز اتوار

اے این پی کا ناظم و نائب ناظم مردان کی معطلی کے خلاف قانونی جنگ لڑنے کا اعلان
صوبائی حکومت نے غیر جمہوری اقدام اٹھاکر عوامی مینڈیٹ کی توہین کی ، پی ٹی آئی بلدیاتی نظام کو کمزور کرناچاہتی ہے
اے این پی بلدیات دشمن رویئے پر خاموش نہیں بیٹھے گی،تبدیلی کے دعویداروں نے صوبے کی ترقی کے لئے کچھ نہیں کیا
پختون قوم بیدار ہوچکی ہے اور مزید جھوٹے دعوؤں اور وعدوں میں نہیں آئے گی، ہوتی ہاوس میں میڈیا سے بات چیت
عمران خان وزیراعظم بننے کے لئے پنجاب کی سیاست کررہے ہیں، پی کے29میں جلسہ سے خطاب

پشاور ( پ ر ) سابق وزیراعلیٰ اور اے این پی کے صوبائی صدر امیرحیدرخان ہوتی ایم این اے نے ضلع ناظم مردان اورنائب ناظم کے معطلی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس کے خلاف سیاسی اور قانونی جنگ لڑنے کا اعلان کیاہے اورکہاہے کہ صوبائی حکومت نے غیر جمہوری اقدام اٹھاکر عوامی مینڈیٹ کی توہین ہے ، پی ٹی آئی بلدیاتی نظام کو کمزور کرناچاہتی ہے وہ ہوتی ہاؤس مردان میں میڈیا سے گفتگو اوربعدازاں پی کے 29کے علاقہ شکرے بابا میں جلسے سے خطاب کررہے تھے جلسے میں ویلج تھری کاٹلنگ ٹو کے چیئرمین نثارالحسن ، رفیق حسین عرف میجر ، رشید خان اور ارشدخان سمیت سینکڑوں افراد نے اپنی پارٹیوں سے مستعفی ہو کر اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا انہوں نے کہاکہ ضلع ناظم حمایت اللہ مایار اورنائب ناظم اسد علی کشمیری کو صرف اس بات کی سزادی گئی کہ وہ ضلع میں تاخیر کے شکار ترقیاتی منصوبوں اوروہ موجودہ اراکین اسمبلی کے غلط فیصلوں غلط معاملات کے راستے میں رکاؤٹ تھے امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ عمران خان ایک طرف عوامی مینڈیٹ کی احترام اور بلدیاتی نمائندوں کے اختیارات کی بات کرتے ہیں اور دوسری طرف ان کی صوبائی حکومت نے بلدیاتی نمائندوں کے مینڈیٹ تسلیم کرنے سے انکاری ہے جو اس بات کی واضح ثبوت ہے کہ پی ٹی آئی بلدیاتی نظام کو ناکام بناناچاہتی ہے انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت نے اے این پی کا راستہ روکنے کیلئے ہر حربہ استعمال کیا بلدیاتی نمائندوں کے فنڈز میں 75فیصد کمی گئی اوران کے اختیارات کم کردیئے گئے لیکن اے این پی حکومت کی بلدیات دشمن رویئے پر خاموش نہیں بیٹھے گی امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ وہ ضلع ناظم اور نائب ناظم کی معطلی کے حوالے سے اے این پی کے اتحادیوں سے مشاورت کرکے سیاسی اور قانونی جنگ لڑیں گے اور قطعی طورپر عوامی مینڈیٹ کی توہین پر مبنی فیصلے کو تسلم نہیں کریں گے دریں اثناء جلسے سے خطاب کرتے ہوئے اے این پی کے صوبائی صدر نے کہاکہ تبدیلی کے دعویداروں نے اس صوبے کی ترقی کے لئے کچھ نہیں کیا تین سال میں کوئی بڑا منصوبہ سامنے نہیں آیا اور اب تک وعدوں پر وعدے کئے جارہے ہیں لیکن پختون قوم بیدار ہوچکی ہے اور مزید جھوٹے دعوؤں اور وعدوں میں نہیں آئیں گے اور آئندہ انتخابات میں پی ٹی آئی کا بوریابستر گول کردیں گے امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ اے این پی کے دور حکومت میں ہرطرف ترقی کا دوردورہ تھا تبدیلی والوں کے دور میں ترقی کا پہیہ رک گیاہے اورتین سال گزرنے کے باوجود کوئی نیا منصوبہ شروع نہیں کیاگیا انہوں نے کہاکہ عمران خان وزیراعظم بننے کے لئے پنجاب کی سیاست کررہے ہیں جبکہ میاں نوازشریف اپنی کرسی بچانے میں لگے ہوئے ہیں امیرحیدرخان ہوتی نے کارکنوں کوہدایت کی کہ وہ پختون قوم کی یکجہتی اور اتحاد واتفاق کے لئے گھر گھر جاکر جرگے کریں انہوں نے کہاکہ پختون قوم کے مسائل کاحل صرف سرخ جھنڈے کے پاس ہے انہوں نے کہاکہ سرخ جھنڈا ترقی کی علامت ہے اور اقتدار میں آکر دوبارہ صوبے میں ترقی کا دوردورہ ہوگا اس موقع پر اے این پی میں شمولیت اختیا رکرنے والوں کوٹوپیاں پہنائی گئیں اورانہیں مبارک باددیتے ہوئے تالیوں کی گونج میں ان کا خیر مقدم کیاگیا جبکہ صوبائی صدر کا جلسہ گاہ پہنچے پر مثالی استقبال کیاگیا کارکنوں نے ڈھول کی تاپ پربھنگڑے ڈالے ۔