مورخہ : 17.3.2016 بروز جمعرات

اے این پی ضلع پشاور کی کابینہ تحلیل کر دی گئی۔
ضلعی صدر آئین کے مطابق جنرل کونسل سے اعتماد کا ووٹ لینے میں ناکام رہے۔
نئی ضلعی کابینہ کے انتخاب کیلئے آئندہ چند روز کے دوران الیکشن شیڈول کا اعلان کیا جائیگا۔

پشاور (پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نیضلع پشاور کے صدر کی ضلعی جنرل کونسل سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکامی پر الیکشن کمیشن کی سفارشات کی روشنی میں اے این پی ضلع پشاور کی کابینہ کو تحلیل کر دیا ہے جبکہ نئی ضلعی کابینہ کے انتخاب کیلئے الیکشن شیڈول کا آئندہ چند روز کے اندر اعلان کیا جائیگا۔
صوبائی ترجمان ہارون بشیر بلور کی جانب سے جاریکردہ بیان کے مطابق صوبائی کابینہ کے گزشتہ اجلاس کے دوران طے شدہ فیصلے کے مطابق ضلعی صدر نے جنرل کونسل سے اعتماد کا ووٹ لینا تھا تاہم وہ اس میں ناکام رہے جس کے باعث صوبائی صدر نے آئین کی رو سے ضلعی کابینہ کو تحلیل کر دیا۔
بیان کے مطابق جمعرات کے روز باچا خان مرکز پشاور میں چیئرمین حسین علی شاہ اور دیگر ممبران شگفتہ ملک ، سید عاقل شاہ ، ہارون بشیر بلور ، نمروز خان اور ایوب خان اشاڑی پر مشتمل صوبائی الیکشن کمیشن کے زیر اہتمام جنرل کونسل کے ذریعے ضلعی صدر کو اعتماد کا ووٹ لینے کا عمل مکمل ہوا تاہم ضلعی صدر آئین کے تحت اعتماد کا ووٹ لینے میں ناکام رہے جس کے نتیجے میں صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے ضلعی کابینہ تحلیل کی اور نئی ضلعی کابینہ کے انتخاب کیلئے دو دن کے اندر شیڈول کا اعلان کر دیا۔یاد رہے کہ آئینی طریقہ کار کے مطابق ضلعی صدر کے اعتماد کیلئے 194 ووٹ درکار تھے جبکہ صدر نے 175 ووٹ حاصل کیے۔اس عمل کے دوران ٹوٹل 386 جنرل کونسل ارکان میں سے 290 حاضر تھے۔