مورخہ : 22.4.2016 بروز جمعہ
اے این پی صوبے اور عوام کے وسائل لوٹنے والوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرے گی۔ سردار حسین بابک
مذہب ، پاکستان اور تبدیلی کے نام پر صوبے کے استحصال کا دور گزر چکا ہے۔
صوبے پر ایسے لوگ مسلط ہیں جن کو عوام کے مفادات سے کوئی سروکار نہیں ہے۔ پی کے 8 میں اجتماع سے خطاب

پشاور ( پریس ریلیز ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ اے این پی اپنے کردار اور مثالی جدوجہد کی تقلید میں صوبے کے وسائل لوٹنے والے برسراقتدار ٹولے کی پشتون دُشمن پالیسیوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرے گی اور کسی کو بھی یہ اجازت نہیں دے گی کہ وہ مذہب ، پاکستان یا تبدیلی وغیرہ کے نام پر صوبے کے مفادات اور عوام کو حقوق کا استحصال کریں۔
وہ پی کے 8 کی انتخابی مہم کے دوران علاقہ یوسی جوگنی میں ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے جس سے دوسرے رہنماؤں ملک نسیم ، شازیہ اورنگزیب ، ارباب انعام ، نثار خان مہمند اور نامزد اُمیدوار اعجاز احمد سیماب نے بھی خطاب کیا۔
سردار حسین بابک نے خطاب میں کہا کہ مذہب ، پاکستان اور تبدیلی وغیرہ کے نام پر پشتونوں اور صوبے کے استحصال کا دور گزر چکا ہے ۔ عوام جان چکے ہیں کہ جنگ کفر اور اسلام کا نہیں ہے بلکہ صوبے کے مفادات کی ہے اور اُن کے حقوق کے تحفظ کی ذمہ داری اے این پی ہی کرتی آ رہی ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف پنجاب کی جبکہ پیپلز پارٹی سندھ کے مفادات کی سیاست کرتی آرہی ہیں۔ اس لیے ہمارے صوبے کے عوام اے این پی سے رجوع کر رہے ہیں اور وہ جوق در جوق پارٹی میں شامل ہو رہے ہیں۔
اُنہوں نے کہا کہ صوبے پر ایسا ٹولہ قابض ہے جس کو عوام کے مفادات اور صوبے کے اثاثہ جات کی حفاظت سمیت عوام کے حقوق سے کوئی سروکار نہیں ہیں تاہم اے این پی ایسے عناصر کے عزائم کو ناکام بنانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑے گی اور سیاسی میدان میں ان کا ڈٹ کر مقابلہ کرے گی۔
اُنہوں نے کہا کہ حکمران ٹولے کی نااہلی اور کرپشن کے باعث صوبے کے اجتماعی مفادات کو سنگین خطرات لاحق ہو گئے ہیں اور عوام پر یہ حقیقت واضح ہو گئی ہے کہ اے این پی ہی اُن کی نمائندگی اور حقوق کی نگہبان قوت ہے۔