مورخہ :23.2.2016 بروز منگل

این ٹی ایس کے ذریعے بھرتی اساتذہ کو فوری طور پر مستقل کیا جائے۔ سردار حسین بابک
ناقابل تبادلہ بھرتیاں سراسر غیر منطقی فیصلہ ہے ۔ انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کی جائیں۔

پشاور(پ،ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ موجودہ دور حکومت میں صوبے کے تمام کیڈرز کے این ٹی ایس کے ذریعے بھرتی اساتذہ کو فوری طور پر مستقل کیا جائے۔ باچا خان مرکز میں اساتذہ کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران اُنہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے تمام کیڈرز سکول اساتذہ کو ایڈہاک پر بھرتی کر کے ان کو سرکاری ملازمت کے مراعات اور حقوق سے محروم کر دیا ہے جو کہ سراسر انصافی اور انسانی اور سرکاری حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ انصاف کے دعویدار حکومت صوبے میں تمام کیڈرز کے سکول اساتذہ کو جو کہ این ٹی ایس کے ذریعے بھرتی کیے گئے ہیں کو فوری طور پر مستقل کرے تاکہ وہ دلجمعی کیساتھ بہترین اساتذہ کا کردار ادا کر سکیں۔
سابق صوبائی وزیر نے کہا کہ این ٹی ایس کے ذریعے تمام سکول کیڈز اساتذہ کی بھرتی ناقابل تبادلہ ہے جو کہ سراسر غیر منطقی فیصلہ ہے۔ لہٰذا نئے بھرتی ہونے والے اساتذہ کی مستقلی کے ساتھ ساتھ اُنہیں ٹرانسفر ایبل بنایا جائے تاکہ اُن کی دیرینہ ضرورت اور مطالبہ پورا ہو سکے۔ اُنہوں نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ این ٹی ایس کے ذریعے ایڈ ہاک بھرتی شدہ اساتذہ نہ قانونی چھٹی لے سکتے ہیں اور نہ زنانہ اساتذہ کو میٹرینیٹی چھٹی دی جا رہی ہے جو کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔
اے این پی کے رہنما نے کہا کہ این ٹی ایس کے ذریعے بھرتی اساتذہ پر امتحانات میں ڈیوٹیاں دینے پر پابندی ہے۔ اور کسی طرح امتحانات میں ڈیوٹی سرانجام نہیں دے سکتے۔ سالانہ انکریمنٹ ان کو نہیں دیا جا رہا جو کہ کسی طرح مناسب نہیں اور این ٹی ایس کے ذریعے بھرتی ایڈہاک اساتذہ کے اوور ایج ہونے کا خطرہ ہے۔